خالد محمود خالد صاحب  

غم ِ دنیا سے فارغ زندگی محسوس ہوتی ہے

نور افشاں ہے مرا دیدۂ تر تو دیکھو
ظُلمتُوں میں بھی نمایاں ہے سحر تو دیکھو
ان کی الفت ہے تو سب کچھ ہے مرے دامن میں
کتنا پیارا ہے مرا زاد ِ سفر تو دیکھو

غم ِ دنیا سے فارغ زندگی محسوس ہوتی ہے

محمد کی یہ بندہ پروری محسوس ہوتی ہے

 

...

اگر حُب نبی کے جام چھلکائے نہیں جاتے

کتنی محبوب خدا نے تجھے صورت بخشی
جو ہے قرآن ہی قرآن وہ سیرت بخشی
انبیاء حشر میں ڈھونڈیں گے سہارا تیرا
میرے آقا تجھے اللہ نے وہ عزت بخشی

 

اگر حُب نبی کے جام چھلکائے نہیں جاتے

تو یہ آثار رحمت کے کہیں پائے نہیں جاتے

 

...

عشق رسولِ پاک میں آنکھ جو اشکبار ہے

تیرے کرم کے احاطے میں دونوں عالم ہیں
کوئی کہیں بھی ہو بیشک تری نگاہ میں ہے
تیری پناہ کا جس بے نوا پہ ہے سایہ
وہ دو جہان میں سب سے بڑی پناہ میں ہے

عشق رسولِ پاک میں آنکھ جو اشکبار ہے

وجہ سکوں ہیں دھڑکیں دل کو بڑا قرار ہے

 

...