گلہائے بخشش  

مدینہ سامنے ہے

مدینہ سامنے ہے بس ابھی پہنچا میں دم بھر میں
تجسس کروٹیں کیوں لے رہا ہے قلبِ مضطر میں
...

مدحِ شہِ والاﷺ

کرے مدحِ شہِ والا، کہاں انساں میں طاقت ہے
مگر اُن کی ثنا خوانی، تقاضائے محبّت ہے
...

ذوقِ عمل

اگر ذوقِ عمل کو آج امیرِ کارواں کرلیں
بدل کر پھر وہی پہلی سی تقدیرِ جہاں کرلیں
...