Poetry  

Akhund Mulla Muhammad Jamaluddin

اسیروں کے مشکل کشا غوث اعظمفقیروں کے حاجت رَوا غوث اعظم گھرا ہے بَلاؤں میں بندہ تمہارامدد کے لیے آؤ یا غوث اعظم ترے ہاتھ میں ہاتھ میں نے دیا ہےترے ہاتھ ہے لاج یا غوث اعظم مریدوں کو خطرہ نہیں بحرِ غم سےکہ بیڑے کے ہیں ناخدا غوث اعظم تمھیں دُکھ سنو اپنے آفت زدوں کاتمھیں درد کی دو دوا غوث اعظم بھنور میں پھنسا ہے ہمارا سفینہبچا غوث اعظم بچا غوث اعظم جو دکھ بھر رہا ہوں جو غم سہ رہا ہوںکہوں کس سے تیرے سوا غوث اعظم زمانے کے دُکھ درد کی رنج و غم کیترے ہ...

Parey Mujh Per Naa Kuch Aftaad Ya Ghous

پڑے مجھ پر نہ کچھ اُفتاد یا غوثمدد پر ہو تیری اِمداد یا غوث اُڑے تیری طرف بعد فنا خاکنہ ہو مٹی مری برباد یا غوث مرے دل میں بسیں جلوے تمہارےیہ ویرانہ بنے بغداد یا غوث نہ بھولوں بھول کر بھی یاد تیرینہ یاد آئے کسی کی یاد یا غوث مُرِیْدِیْ لَا تَخَفْ فرماتے آؤبَلاؤں میں ہے یہ ناشاد یا غوث گلے تک آ گیا سیلاب غم کاچلا میں آئیے فریاد یا غوث نشیمن سے اُڑا کر بھی نہ چھوڑاابھی ہے گھات میں صیاد یا غوث خمیدہ سر گرفتارِ قضا ہےکشیدہ خنجر جلاّد یا غوث اندھی...

Too hai Woh Ghous k Har Ghous Hai Shaida Tera

تو ہے وہ غوث کہ ہر غوث ہے شیدا تیراتو ہے وہ غیث کہ ہر غیث ہے پیاسا تیرا سورج اگلوں کے چمکتے تھے چمک کر ڈوبےافقِ نور پہ ہے مہر ہمیشہ تیرا مرغ سب بولتے ہیں بول کے چپ رہتے ہیںہاں اصیل ایک نوا سنج رہے گا تیرا جو ولی قبل تھے یا بعد ہوئے یا ہوں گےسب ادب رکھتے ہیں دل میں مِرے آقا تیرا بقسم کہتے ہیں شاہانِ صریفین و حریمکہ ہوا ہے نہ ولی ہو کوئی ہمتا تیرا تجھ سے اور دہر کے اقطاب سے نسبت کیسیقطب خود کون ہے خادم تِرا چیلا تیرا سارے اقطاب جہاں کرتے ہیں کعبے ک...

Al Aaman Qahar Hai Ya Ghous Woh Teekha Tera

الاماں قہر ہے اے غوث وہ تیکھا تیرامر کے بھی چین سے سوتا نہیں مارا تیرا بادلوں سے کہیں رکتی ہے کڑکتی بجلیڈھالیں چھنٹ جاتی ہیں اٹھتا ہے جو تیغا تیرا عکس کا دیکھ کے منھ اور بھپر جاتا ہےچار آئینہ کے بل کا نہیں نیزا تیرا کوہ سرمکھ ہو تو اِک وار میں دو پَر کالےہاتھ پڑتا ہی نہیں بھول کے اوچھا تیرا اس پہ یہ قہر کہ اب چند مخالف تیرےچاہتے ہیں کہ گھٹا دیں کہیں پایہ تیرا عقل ہوتی تو خدا سے نہ لڑائی لیتےیہ گھٹائیں، اُسے منظور بڑھانا تیرا وَرَفَعْنَا لَکَ ذِکْ...

Banda Qadir Ka Bhi Qadir Bhi Hai Abdul Qadir

بندہ قادر کا بھی قادر بھی ہے عبدالقادرسرِّ باطن بھی ہے ظاہر بھی ہے عبدالقادر مفتیِ شرع بھی ہے قاضیِ ملّت بھی ہےعلمِ اَسرار سے ماہر بھی ہے عبدالقادر منبعِ فیض بھی ہے مجمعِ افضال بھی ہےمہرِ عرفاں کا منور بھی ہے عبدالقادر قطبِ ابدال بھی ہے محورِ ارشاد بھی ہےمرکزِ دائرۂ سِرّ بھی ہے عَبدالقادر سلکِ عرفاں کی ضیا ہے یہی درِّ مختارفخرِ اشباہ و نظائر بھی ہے عَبدالقادر اُس کے فرمان ہیں سب شارحِ حکمِ شارعمظہرِ ناہی و آمر بھی ہے عبدالقادر ذی تصرف بھی ہے ماذو...

Rakhta Hai Jo Ghous e Azam Se Niyaz

رکھتا ہے جو غوث اعظم سے نیازہوتا ہے خوش اس سے مولیٰ بے نیاز ہوں گی آساں تیری مشکلیںصدق دل سے غوث کی کردے نیاز ہے فضیلت گیارہویں تاریخ میںاس لیے افضل ہے اس میں دے نیاز سازو ساماں کی نہیں تخصیص کچھجو میسر ہو اسی پر دے نیاز ہاں ادب تعظیم لازم ہے ضروربے ادب ہر گز نہ کھائے یہ نیاز ہیں جو بد مذہب وہابی رافضیہے حرام ان کو اگر کچھ دے نیاز کاندوی بھی بے ادب گمراہ ہےہے حرام اس کو اگر کچھ دے نیاز اے جمیل قادری ہشیار باشعمر بھر چھوٹے نہ یہ تجھ سے نیاز قبالہ...

Jaan o Dil Se Tum Pe Meri Jaan Qurban Ghous e Pak

جان و دل سے تم پہ میری جان قرباں غوث پاکہے سلامت تم سے میرا دین و ایماں غوثِ پاک میں ترا ادنیٰ بھکاری تو مرا سلطان ہےہے قسم حق کی یہ میرا دین و ایماں غوث پاک میں ترا مملوک تو مالک میں بندہ تو ہے شاہتو سلیماں اور میں مورسلیماں غوث پاک سجدہ گاہ اولیائے دہر ہے نقش قدماور تری نعل مقدس تاج شاہاں غوث پاک اولیا ہیں سب سلاطین ہم رعایأ و غلاماولیاء سب ہیں رعیت اور سلطاں غوث پاک ہاتھ خالی روسیہ عاصی یہ سب کچھ ہوں مگرنام ہے تیرا مرے سینے میں پنہاں غوث پاک ...

Kiya Likhoun Izo Ulaey Ghous e Pak

کیا لکھوں عزّو علائے غوث پاکہونہیں سکتی ثنائے غوث پاک شاہ کردے چور کو اک آن میں میں فدا تجھ پر عطائے غوث پاک اس کے قدموں میں سلاطیں سرجھکائیںاپنےسر پر لے جو پائے غوث پاک سب کے پھیلے ہاتھ اس کے سامنے ہوگئی جس پر عطائے غوث پاک یاخدا بہر شہید کربلاہو ترقی پر ولائے غوث پاک کیا عجب ہم بے کسوں کو خواب میں چہرۂ انور دکھائے غوث پاک قبر سے اٹھوں تو اے رب کریممیرا سرہو اور پائے غوث پاک غوث اعظم ہیں غلاموں کے لیےہم بھکاری ہیں برائے غوث پاک کاش ہم ...

Tere Jad ki Hai Barweeh Ghous e Azam

ترے جد کی ہے بارہویں غوث اعظمملی ہے تجھے گیا رہویں غوث اعظم کوئی ان کے رتبہ کو کیا جانتا ہےمحمد کے ہیں جانشیں غوث اعظم تو ہے نور و آئینٔہ مصطفائینہیں تجھ سا کوئی حسیں غوث اعظم ہوئے اولیا ذی شرف گرچہ لاکھوںمگر سب سے ہیں بہتریں غوث اعظم جہاں اولیا کرتے ہیں جبھ سائی وہ بغداد کی ہے زمیں غوث اعظم ترے روضۂ پاک کے دیکھنے کوتڑپتا ہے قلب حزیں غوث اعظم مجھےبھی بلا لو خداراکہ میں بھیگھسوں آستاں پر جبیں غوث اعظم مرے قلب کا حال کیا پوچھتے ہویہ دل ہے مکاں اور...