Hanafi Scholars  

Ishaq Samarqandi

    اسحٰق بن محمد اسمٰعیل بن ابراہیم بن زید الحکیم السمر قندی: بسبب کثرت حکمت و مو عظمت کے آپ حکیم کے لقب سے ملقب ہوئے۔کنیت ابو القاسم تھی۔ سمعانی نے لکھا ہے کہ آپ برے نیکو کار بندوں میں سے حکمت و حسن المعاشرت میں ضرب المثل تھے اور اخلاق حمیدہ و افعال پسندیدہ کے سبب مشرق سے مغرب تک مشہور ہوئے۔فقہ وعلم کلام کو آپ نے ابی منصور ما تریدی سے اخذ کیا اور ابا بکر وراق اور دیگر مشائخ کی مصاحبت کی اور ان سے تصوف کا علم حاصل کیا۔مدت تک سمر قند کی...

Ishaq Samarqandi

    اسحٰق بن محمد اسمٰعیل بن ابراہیم بن زید الحکیم السمر قندی: بسبب کثرت حکمت و مو عظمت کے آپ حکیم کے لقب سے ملقب ہوئے۔کنیت ابو القاسم تھی۔ سمعانی نے لکھا ہے کہ آپ برے نیکو کار بندوں میں سے حکمت و حسن المعاشرت میں ضرب المثل تھے اور اخلاق حمیدہ و افعال پسندیدہ کے سبب مشرق سے مغرب تک مشہور ہوئے۔فقہ وعلم کلام کو آپ نے ابی منصور ما تریدی سے اخذ کیا اور ابا بکر وراق اور دیگر مشائخ کی مصاحبت کی اور ان سے تصوف کا علم حاصل کیا۔مدت تک سمر قند کی...

Ahmed Tabree

              احمد بن محمد بن عبد الرحمٰن [1]طبری: بغداد کے فقہاء کبار میں سے تھے۔ کنیت ابو عمر تھی،فقہ آپ نے ابی سعیدبروعی سے حاصل کی اور امام ابی الحسن کرخی کے زمانہ میں درس و تدریس میں مشغول رہے۔علی قادری نے طبقات حنفیہ میں لکھا ہے کہ آپ امام ابی جعفر طحطاوی اور ابی الحسن کرخی کے طبقہ میں سے تھے۔آپ نے امام محمد کی جامع صغیر و جامع کبیر کی شرحیں لکھیں اور ۳۴۰؁ھ میں وفا ت پائی۔ طبری طبرستان ...

Abdullah Bin Muhammad Bin Yaqoob

                عبد اللہ بن محمد بن یعقوب بن حارث سبذ  مونی المعروف بہ استاذ: اپنے زمانہ کے امام فاضل محدث کثیر الحدیث فقیہ بے نظیر مرجع فقہائے حنفیہ تھے۔شاہ ولی اللہ محدث دہلوی نے رسالہ انتباہ میں آپ کو اصحاب وجوہ میں سے جن کا درجہ مجتہد منتب اور مجتہد مذہب کے درمیان میں ہے،شمار کیا ہے۔ماہر ربیع الاخر ۲۵۸؁ھ میں پید اہوئے اور شہر مون میں جو بخارا سے نصف فرسنگ کے فاصلہ پر ہے،رہتے تھے...

Ahmed Safar Balkhi

                احمد بن عصمہ صفا بلخی: اپنے عہد کے امام کبیر فاضل بے نظیر تھے،دور دور سے لوگ وسچے استفادہ کے آیا کرتے تھے،ابو القاسم کنیت تھی اور کانسی کے برتنوں کی تجارت کرتے تھے،ہی بذات خود اٹھ کر برتن دکھاتے اور شاگردوں سے ہر گز امداد نہ لیتے۔علوم آپ نے نصیر بن یحییٰ شاگرد محمد بن سماعہ سے جو امام ابو یوسف کے شاگرد تھے،حاصل کئے اور آپ سے ابو حامد احمد بن حسین مروزی نے تفقہ کیا اور ۳۳۶...

Hakim Shaheed

                محمد بن محمد بن احمد بن عبد اللہ بن عبد المجید بن اسمٰعیل بن حاکم مرزوزی بلخی الشہیر بہ حاکم الشہید: ابو الفضل کنیت تھی۔حافظ احادیث رسول اللہ اور اپنے وقت کے امام فاضل فقیہ متجر ہوئے،پھر امیر خراسان نے اپنی وزارت آپ کو دی لیکن اسم وزارت سے کراہیت کرتے تھے،آپ نے حدیث کو مرو میں محمد حمدویہ شاگرد امام احمد بن حنبل اور محمد عصام اور رے میں ابراہیم بن یوسف اور بغدادمیں ہیثم ب...

Muhammad Bin Mehmood

                محمد بن محمود ما تاریدی: مشائخ  کبار میں سے بڑے محقق و مدقق، متکلمین کے امام اور عقائد مسلمین کے مصحح عابد زاہد متحمل صاحب کرامات تھے۔آپ کے زمانہ میں ریاست مذہب امام ابو حنیفہ کی آپ پر منتہی ہوئی۔ابو منصور کنیت تھی۔فقہ بکر احمد جوزجانی تلمیذ ابو سلیمان جوزجانی سے حاصل کی اور آپ سے حکیم قاضی اسحٰق بن محمد محمد سمر قندی اور علی رستغفنی اور محمد عبد الکریم بن موسیٰ چنان...

Ahmed Bin Abbas Bin Hussain

           احمد بن عباس بن حسین بن عیاض سمر قندی: بڑے فقیہ اور عالم فاضل تھے،علمائے ہمعصر میں سے کسی کی یہ جرأت نہ تھی کہ علم و کیاست اور تیزی طبع و پرہیز گاری میں آپ سے ہمسری کر سکت۔ابو نصر کنیت تھی۔آپ کی نسل سعد بن عبادہ انصاری خزرجی صحابی سے ملتی ہے اور عیاض آپ کے اجداد میں سے کسی کا نام ہے جس کی طرف آپ منسوب ہیں۔           آپ سمر قند میں رہتے تھے،ف...

Muhammad Bin Ahmed Abu Bakar

           محمد بن احمد ابو بکر الاسکاف البلخی: اپنے وقت کے امام اور فقیہ جلیل القدر تھے،فقہ کو اپ نے محمد بن سلمہ تلمیذ ابی سلیمان جو زجانی سے پڑھا اور آپ سے ابو بکر اعمش محمد بن سعید متوفی ۳۴۸ھ؁اور ابو جعفر ہندوانی نے تفقہ کیا۔وفات آپ کی ۳۳۳ھ؁ میں ہوئی۔نفھات الانس میں لکھا ہے کہ اپ تیس سال سے روز مرہ روزہ رکھا کرتے تھے،جب نزع کا وقت آیا تو لوگ پانی سے پنبہ تر کر آپ کے منہ کے آگے لے گئے مگر آپ نے...

Ahmed Bin Walaadnahavi

              احمد بن محمد بن ولادنحوی: ابو العباس کنیت تھی،فقیہ فاضل جامع معقول اور نحوی تھے،سیوبہ کی مبرد پر کتاب انتصار اور کتاب انتصار اور کتاب المقصود والممدود بطور حروف معجم تصنیف کیں،۳۳۲ھ؁ میں وفات پائی۔ (حدائق الحنفیہ)...