Companions of the Holy Prophet  

ابوعامر اشعری رضی اللہ عنہ:ابوموسیٰ کے چچاتھے،اوران کانام عبید بن سلیم بن حضار تھا،اورہم ان کا ذکر ابوموسیٰ عبداللہ بن قیس کے ترجمے میں کرآئے ہیں،ابن امداشنی نےان کا نام عبید بن وہب بیان کیا ہے لیکن بے سود بات کی اورابوعامر کبارصحابہ سے تھے،جو غزوۂ حنین میں شہید ہوئے تھے۔ عبیداللہ بن سمین نے باسنادہ تایونس ابن اسحاق سے روایت کی،کہ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے ابوعامرکوان لوگوں کے تعاقب میں روانہ کیا،...

ابوعامر ،حنظلہ کے والد تھے،جو غسیل ملائکہ تھے،ابوموسیٰ نے کتابتہً ابوعبداللہ محمد بن عمربن ہارون الفقیراندھے سے،انہوں نے ابوبکراحمد بن علی بن ثابت کے خط سے،انہوں نے ابوبکراحمد بن محمد بن غالب یرقانی سے،انہوں نے علی سے (جودارقطنی کے عمزاد ہیں)انہوں نے احمد بن محمد بن سعید سے ،انہوں نے عبید بن حمدون رواسی سے،انہوں نے حسن بن طریف بن ناصح سے ،انہوں نے اپنے والد سے،انہوں عبدالرحمٰن بن ناصح الجعفی سے،انہوں نے اجلح سے،انہوں...

ابوعامر اشعری رضی اللہ عنہ:ابوموسیٰ کے چچاتھے،اوران کانام عبید بن سلیم بن حضار تھا،اورہم ان کا ذکر ابوموسیٰ عبداللہ بن قیس کے ترجمے میں کرآئے ہیں،ابن امداشنی نےان کا نام عبید بن وہب بیان کیا ہے لیکن بے سود بات کی اورابوعامر کبارصحابہ سے تھے،جو غزوۂ حنین میں شہید ہوئے تھے۔ عبیداللہ بن سمین نے باسنادہ تایونس ابن اسحاق سے روایت کی،کہ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے ابوعامرکوان لوگوں کے تعاقب میں روانہ کیا،...

Abu Abdullah Qaini

ابوعبداللہ قینی،انہیں صحبت ملی،مصرمیں سکونت کرلی تھی،ان سے ابوعبدالرحمٰن جیلی نے سرق کا قصّہ اوراس کے سودے کا ذکرکیاہے،جسے اس نے ادھارپر خریداتھا،اورپھربھگالے گیاتھا،اور یوں خود کوبتاؤ کیا ان کی یہ حدیث قوی نہیں،اورایک روایت میں ابوعبدالرحمٰن مذکورہے،اس کا ذکر آگےآئے گا،تینوں نے ان کا ذکرکیاہے۔ ...

ابوعامر،کوفی شمارہوتے ہیں،مطین اورطبرانی نے ان کا ذکرکیا ہے،ابوموسیٰ نے کتابتہً ابوغالب احمد بن عباس سے،انہوں نے ابوبکربن زیدہ سے(ح) ابوموسیٰ کا قول ہےکہ انہیں ابوعلی نے ،انہیں احمدبن عبداللہ نے ،انہیں سلیمان بن احمد نے،انہیں بن داؤدمکی نے،انہیں مسلم بن ابراہیم نے، انہیں مالک بن مغول نے،انہیں علی بن مدرک نے،انہیں ابوعامرنے بتایا،کہ ہم میں کچھ کمی تھی، اس لئے انہوں نے حضورِاکرم کی محفل میں آنا چھوڑدیا،آپ نے وجہ دریا...

ابوعامر ثقفی ان سے محمد بن قیس نے روایت کی،ان کی حدیث کے بارے میں ایک شخص سے مروی ہے کہ ابوعامرنامی آدمی نے حضورِاکرم کو فرماتے سُنا،سبزی جنت ہے،کشتی ذریعۂ نجات ہے، عورت خیر ہے،اونٹ باعثِ رنج ہے،اوردودھ عین فطرت ہے،اور قید ثبات فی الدین ہے اور مجھے دھوکادینا نا پسند ہے،ابن مندہ اور ابونعیم نے ذکرکیا ہے۔ ...

ابوعامر،بقول ابوموسیٰ یہ مخلتف آدمی ہیں،ابوحنیفہ نے محمدبن قیس سے روایت کی کہ ایک آدمی جس کی کنیت ابوعامرتھی،ہرسال حضوراکرم صلی اللہ علیہ وسلم کو تحفہ پیش کیا کرتا تھاجس سال شراب حرام ہوئی،اس نے حضور اکرم کو حسب معمول شراب کی ٹھلیا بطورہدیہ پیش کی،آپ نے فرمایا اے ابوعامر شراب توحرام ہوچکی ہے،اس نے عرض کیا یا،رسول اللہ !اسے بیچ دیجئے،اوراس کی قیمت کو اپنے کام میں لائیے،فرمایا،جس طرح شراب کا پیناحرام ہے،اسی طرح اس ک...

Abu Abdullah Aslami

ابوعبداللہ اسلمی،ایک روایت میں ان کی کنیت ابوحدردمذکورہے،ابوموسیٰ نے اجازۃً ابوسہل غانم بن احمدالحداد میں حاضرتھااورابوالفضل جعفر بن عبدالواحد سے،انہوں نے ابوطاہر محمد بن احمد بن عبدالرحیم سے،انہوں نے معتمربن سلیمان سے،انہوں نے یزید بن عبداللہ بن قسیط سے،انہوں نے قعقاع بن عبیداللہ سے،انہوں نے ابوعبداللہ سےروایت کی،کہ حضورِاکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے ہمیں ایک سریہ(فوجی مہم) پر روانہ فرمایا،اوراتفاقاً عامر بن اضبط ہمیں ...

Abu Abdullah Hazrat

ابوعبداللہ،صحابی ہیں،ان سے عرقحہ نے روایت کی،حماد نے عطاءبن سائب سے،انہوں نے عرفجہ سے روایت کی کہ وہ عتبہ بن فرقد کے پاس بیٹھے تھے،کہ حضورِاکرم کے ایک صحابی آگئے،اس پرعتبہ جو حدیث بیان کررہے تھے،رک گئے،اورنوآمد سے کہا،اے ابوعبداللہ!ہمیں رمضان کے بارے میں حدیث سُناؤ،انہوں نے کہا،میں نے حضورِاکرم صلی اللہ علیہ وسلم کو فرماتے سناکہ رمضان میں بہشت کے دروازے کھول دیئے جاتے ہیں،اورجہنم کے دروازے بندکردیئے جاتے ہیں اورشیا...

Abu Abdullah Sunaabhi

ابوعبداللہ صنابحی،نام عثمان بن عسیلہ تھا،صحبت سے فیضیاب ہوئے،حضورِاکرم کی زیارت کے لئے مکےسے مدینے گئے،وہاں پہنچ کر معلوم ہوا،کہ آپ چند روزپیشتروفات پاگئے ہیں،رجاء بن حیوہ نے محمود بن ربیع سے روایت کی،ہم عبادہ بن صامت کے پاس بیٹھے ہوئے تھے،کہ ان کی طبیعت ناساز ہوگئی،اتنے میں صنابحی وہاں آگئے،عبادہ کہنے لگے،جس کی خواہش ایسے شخص کو دیکھنے کی ہو،جو سات آسمانوں کی بلندیوں کو چُھوآیاہے،تواسے چاہئیے کہ صنابحی کودیکھ لے...