Companions of the Holy Prophet  

عبدالرحمٰن بن زیدبن خطاب ایسےلوگوں سےجنہیں حضورِاکرم کی صحبت نصیب ہوئی،ابویاسرنے باسنادہ عبداللہ سے،انہوں نےاپنےوالدسےانہوں نےیحییٰ بن زکریاسے،انہوں نےحجاج بن ارطاہ سےانہوں نے حسین بن حارث حدلی سےروایت کی کہ عبدالرحمٰن بن زیدبن خطاب نےایک ایسےدن کےبارےمیں خطاب کیاجب رمضان کےبارے میں شک پڑجائے،انہوں نےکہا،غور سےسنو،میں حضوراکرم کے کئی صحابہ کی صحبت میں بیٹھاہوں،میں نےان سےدریافت کیااور انہوں نےمجھےبتایاکہ حضورِاکرم نے...

عبدالرحمٰن بن علاء الحضرمی ایک ایسےآدمی سےجسےصحبت نصیب ہوئی،سفیان نےعطاء بن سائب سے،انہوں نے عبدالرحمٰن بن حضرمی سے،انہوں نے ایک صحابی سےروایت کی،حضوراکرم نے فرمایا،میری امت کےآخرایسےآئیں گےجومزدورکواس کی اجرت اس طرح اداکریں گےجس طرح اس امت کےپہلےلوگ اداکیاکرتےتھے،اوربُرےاعمال کوبُراسمجھیں گےاوراہل فتنہ سے جنگ کریں گے،دونوں نےذکرکیاہے۔ ...

عبدالواحد بن عبداللہ قرشی ایک صحابی سے،محمدبن سوقہ نےعبدالواحد قرشی سےروایت کی،کہ جب حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ کاسریزیدکےپاس لایاگیا،تواس بدبخت نےایک چھڑی سے آپ کےہونٹوں کوجگہ سےہٹایا،توامام رضی اللہ عنہ کےدانت نمودارہوئے جوبرف سے بھی زیادہ سفیدتھے اوریہ شعرپڑھا۔ یفلقن ھامامن رجال اعزۃ علیناوھم کانوااعق واظلما (ترجمہ)ان بدبختوں نےمعززلوگوں کی کھوپڑیاں پھوڑدیں،اورانہوں نےہم پربڑاظلم اورزیادتی کی۔ ...

Abu Abdullah Khatmi

ابوعبداللہ خطمی حجازی انصاری،ابن ابوفدیک نے ان کی حدیث عمروبن محمد سے،انہوں نے فلیح بن عبداللہ سے،انہوں نے ان کے والد سے،انہوں نے داداسے روایت کی،حضورِاکرم نے فرمایاپانچ اوصاف انبیاء کی سنت ہیں،حیا،حلم،حجامت،مسواک اورخوشبو،ابومندہ اورابونعیم نے ان کا ذکرکیا ہے۔ ...

Abu Abdullah Makhzoomi

ابوعبداللہ مخزومی،صحابی ہیں،ان سے یزید بن مالک نے روایت کی،حضورِاکرم نے فرمایا،جب کسی آدمی کے قدم اللہ کی راہ میں غبارآلود ہوتے ہیں،توایسے شخص پر خداکی طرف سے دوزخ کی آگ حرام ہوجاتی ہے،ابن مندہ اورابونعیم نے ان کا ذکرکیاہے۔ ...

Abu Akhzam

ابواخزم بن عتیک بن نعمان بن عمرو بن عتیک بن عمروبن مبذول بن مالک بج نجار،ان کے بھائی کا نام سہل تھا،وہ بیعت عقبہ میں موجودتھے،اور تمام غزوات میں شریک ہوئے،اور معرکۂ حسر(جس میں ابوعبید ثقفی مارے گئے)میں بھی شریک تھے،ابوعمر نے ان کا ذکر کیا ہے۔ ...

عبداللہ بن عباس انصاری،ہم حضوراکرم کی خدمت میں بیٹھے ہوئےتھے،کہ آسمان پرایک ستارا چھوٹا،حضورِ اکرم نےدریافت فرمایا،تم ستاروں کے چھوٹنے کے متعلق کیاعقیدہ رکھتے تھے، ہم نے جواب دیا،یارسول اللہ!ہم یہ سمجھتےتھے،کہ کوئی بڑاآدمی فوت ہواہے،حضورِاکرم نے فرمایا ستاروں کےچُھوٹنےکاآدمیوں کی موت وحیات سےکوئی تعلق نہیں ہوتا،بلکہ بات یہ ہے،کہ جب خداوند تعالیٰ کوئی حکم صادرفرماتاہے،توحاملین عرش خدا کی تسبیح کہتےہیں،اورپھرآہستہ ...

عبداللہ بن عباس بنوغفارکےایک آدمی سے،عبداللہ بن احمد بن محمدخطیب نےابوسعدمطرزسے اجازۃً انہوں نے احمدبن عبداللہ سے،انہوں نے حبیب بن حسن سے،انہوں نے محمدبن یحییٰ مروزی سے،انہوں نے محمدبن احمدبن ایوب سے،انہوں نے ابراہیم بن سعدسے،انہوں نے محمد بن اسحاق سے،انہوں نے عبداللہ بن حزم سے،انہوں نے اس شخص سے جس نے ابنِ عباس سےروایت کی وہ کہتے ہیں،مجھے بنوغفارکےایک آدمی نے بتایا،کہ میں اورمیراعمزادایک پہاڑ پرچڑھے،وہاں سے بدر کا...

عبداللہ بن کعب بن مالک ایک صحابی سے،ابوالیمان نےشعیب سے،انہوں نےزہری سے،انہوں نےعبداللہ بن کعب سے،انہوں نے ایک صحابی سےروایت کی،کہ حضوراکرم نے فرمایا،اےگروہِ مہاجرین(حضورنےاس دن سرپرپٹی باندھ رکھی تھی)میں دیکھ رہاہوں کہ تمہاری نفری بڑھنا شروع ہوگئی ہےاورانصاروہ لوگ ہیں جنہوں نےمجھےاپنےہاں پناہ دی،پس تمہیں چاہئیےکہ ان کے شرفاکی عزت کرواوران کے خطاکاروں سےدرگزرکرو،دونوں نےذکرکیاہے۔ ...

عبداللہ بن محمدبن حنفیہ ایک انصاری سے،ابواحمدنےباسنادہ ابوداؤدسے،انہوں نےابنِ کثیر سے، انہوں نےاسرائیل سے،انہوں نےعثمان بن مغیرہ سے،انہوں نےسالم بن ابوالجعدسے،انہوں نےعبداللہ بن محمد بن حنفیہ سےروایت کی،کہ میں اورمیراوالداپنےایک انصاری رشتہ دار کی عیادت کے لئے گئے،اتنے میں نمازکاوقت ہوگیا،توانصاری نے اپنی کنیزسےکہا،کہ ہمیں خالص پاکیزگی اوراستراحت لاکردو،ہم نے اس چیزکوناپسندکیا،ہمارےمیزبان نے کہا،میں نے رسول اکرم کوفرماتےسُنا،اے بلال،ہمیں نمازسے ا...