Hain Ap Hadi Ahl e Jahan Zia Uddin

ہیں آپ ہادیِ اہلِ جہاں ضیاءُ الدین
ضیائے مجلسِ غوثِ زماں ضیاءُ الدین

امیرِ قافلۂ عارفاں ضیاءُ الدین
ہیں چارہ سازِ دلِ بے کساں ضیاءُ الدین

نگاہِ حضرتِ احمد رضا کے میں قرباں
بنایا عاشقِ اچھے میاں ضیاءُ الدین

ہے غوثِ پاک کی اُس پر نگاہِ لطف و کرم
ہو جس غریب پہ تم مہرباں ضیاءُ الدین

رضا کے ہاتھ سے پی تھی جو تم نے مَے آقا
عطا ہو بہرِ شہِ مرسلاں ضیاءُ الدین

پَئے حُسین و حَسَن بھیک میں خوشی دے دو
ہیں آپ نائبِ غوثِ جہاں ضیاءُ الدین

تباہ حال ہیں غربت میں خانماں برباد
ہیں تم سے طالبِ امن و اماں ضیاءُ الدین

دُعا جو دی تھی مظؔفّر کو اُس کے صدقے میں
رہے جہاں بھی رہے شادماں ضیاءُ الدین

 

 


All Related

Comments