Ghuzwat (Holy wars)  

غزوہ طائف ماہ شوال ۸ھ میں ظہور پذیر ہوا غزوہ طائف اصل میں غزوہ حنین کے سلسلے کی ہی ایک کڑی تھی۔ طائف ایک سر سبز و شاداب بڑا شہر ہے جو مکہ مکرمہ سے دو تین منزلوں پر واقع ہے اس مقام تک عرفات کے راستے سے ہوتے ہوئے وادی نعمان میں ایک رات بسر کرنے کے بعد پہنچتے تھے ۔ طائف سطح سمندر سے ۱۷۰۰ میڑبلند اور مکہ مکرمہ سے فاصلہ ۶۵ کلو میٹر ہے ۔ طائف کے نواح میں ہی شحمہ کی پہاڑی بستی واقع ہے جہاں رسالت مآب صلی اللہ تعالی علیہ وسلم نے اپنا بچپن گزا...

سرکار دو عالم صلی اللہ تعالیٰ علیہ والہ وسلم نے جب مکہ فتح فرمالیا اور یوں اللہ تعالیٰ نے اپنے محبوب صلی اللہ تعالیٰ علیہ والہ وسلم کے ساتھ کیا ہوا وعدہ سچا فرمایا، تو فتح کے بعد قبائلِ عرب جو کہ کافی عرصہ سے اسی انتظار میں تھے کہ مسلمانوں اور مشرکین میں سے کون اپنے مقصد میں کامیاب ہوتا ہے تاکہ کامیاب ہونے والے گروہ کے ساتھ مستقبل کی وابستگی اختیار کرسکیں۔ جزیرۃ العرب کے قبائل کا اس بات پر یقین تھا کہ جو جماعت(پارٹی) بیت اللہ شریف کو اپنے قبضہ م...

۱۷ رمضان المبارک معرکہ بدر تاریخ اسلام میں پہلا فیصلہ کن معرکہ ہونے کے لحاط سے خونریز مقابلہ کا پہلا مرحلہ ہے جس میں اسلام نے کفرو شرک کے خلاف فرضیت جہاد پر عمل کیا اور علی الاطلاق یہ پہلا معرکہ ہے جس میں فریقین نے ایک دوسرے کا سامنا کیا اور جب سے دعوتِ اسلام کاآغاز ہوا ہے اور اس کے اور کفر کے درمیان جنگ کی ٹھنی ہے ۔اللہ تعالیٰ فرماتا ہے: وَلَقَدْ نَصَرَ کُمُ اللّٰہُ بِبَدْرٍوَّ اَنْتُمْ اَذِلَّۃٌ ج فَاتَّقُوا اللّٰہَ لَ...