سریہ حضرت زید بن حارثہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ (اُمِّ قرفہ) رمضان المبارک 6ہجری اسی سال حضرت ابو بکر صدیق رضی اللہ تعالیٰ عنہ یا حضرت زید بن حارثہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ کو سرکارِ دو عالم صلی اللہ تعالیٰ علیہ والہ وسلم نے امّ قرفہ فاطمہ بنت ربیعہ بن زید فزاریہ کی طرف روانہ کیا۔ یہ عورت ام القری کے گرد و نواح میں رہائش پذیر تھی۔ یہ مقام مدینہ منورہ سے سات منزل کے فاصلہ پر ہے۔ وادی القریٰ کا اہم مقام العلاء ہے کسی زمانے میں قرح وا...

See More

Latest Ziae history-of-islam  

عن واثلۃ بن أسقع أن النبی صلی اللّٰہ تعالیٰ علیہ والہ وسلم قال نزلت صحف ابراھیم علیہ السلام أول لیلۃ من رمضان وأنزلت التوراۃ لست مضین من رمضان وأنزل الانجیل لثلاث عشرۃ خلت من رمضان وأنزل الزبور لثمانی عشرۃ خلت من رمضان وأنزل القرآن لأربع و عشرین خلت من رمضان۔ (اسباب النزول للواحدی،رقم الحدیث: ۱۲) حضرت واثلہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے مروی کہ رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ والہ وسلم نے ارشاد فرمایا کہ حضرت ابراہیم علیہ السلام پر ...

سرکارِ دو عالم صلی اللہ تعالیٰ علیہ والہ وسلم نے حضرت عبد اللہ لیثی رضی اللہ تعالیٰ عنہ کو دو سو تیس (۲۳۰) پیادہ مجاہدین کا سردار بناکر بنو عوال اور بنو عبد ثعلبہ کی تادیب کے لئے اور اکثر روایات میں قبیلہ جہینہ کی ایک شاخ حرقات کی تادیب کے لیے روانہ کیا یہ قبیلہ جہینہ کی شاخ مدینہ منورہ سے 98 میل کے فاصلے پر رہائش پذیر تھی۔(مدینہ منورہ سے مقام میفعہ کافاصلہ بطن نخل سے نجد کی جانب تقریبا98 میل ہے)۔ حضرت عبد اللہ لیثی رضی اللہ تعالیٰ عنہ نے اپنے ...

See More Latest

Most Favourite History of Islam  

عن واثلۃ بن أسقع أن النبی صلی اللّٰہ تعالیٰ علیہ والہ وسلم قال نزلت صحف ابراھیم علیہ السلام أول لیلۃ من رمضان وأنزلت التوراۃ لست مضین من رمضان وأنزل الانجیل لثلاث عشرۃ خلت من رمضان وأنزل الزبور لثمانی عشرۃ خلت من رمضان وأنزل القرآن لأربع و عشرین خلت من رمضان۔ (اسباب النزول للواحدی،رقم الحدیث: ۱۲) حضرت واثلہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے مروی کہ رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ والہ وسلم نے ارشاد فرمایا کہ حضرت ابراہیم علیہ السلام پر ...

سرکارِ دو عالم صلی اللہ تعالیٰ علیہ والہ وسلم نے حضرت عبد اللہ لیثی رضی اللہ تعالیٰ عنہ کو دو سو تیس (۲۳۰) پیادہ مجاہدین کا سردار بناکر بنو عوال اور بنو عبد ثعلبہ کی تادیب کے لئے اور اکثر روایات میں قبیلہ جہینہ کی ایک شاخ حرقات کی تادیب کے لیے روانہ کیا یہ قبیلہ جہینہ کی شاخ مدینہ منورہ سے 98 میل کے فاصلے پر رہائش پذیر تھی۔(مدینہ منورہ سے مقام میفعہ کافاصلہ بطن نخل سے نجد کی جانب تقریبا98 میل ہے)۔ حضرت عبد اللہ لیثی رضی اللہ تعالیٰ عنہ نے اپنے ...

See More Most Favourite History of Islam