Khutba e Juma Ke Waqt Asa Pakarna

03/27/2016 AZT-17721

Khutba e Juma Ke Waqt Asa Pakarna


کیافرماتے ہیں علماء کرام اس مسئلہ کے بارے میں عصا یعنی لاٹھی خطبہ کے دوران اٹھاناکیایہ سنت ہے یانہیں؟

الجواب بعون الملك الوهاب

عصالے کرخطبہ پڑھنے کے بارے میں بعض فقہاء نے سنت لکھاہے اوربعض نے مکروہ۔ لہذا اسی اختلاف کی بنیاد پر جمہور علماء اسے ترک کرتے ہیں کیونکہ اختلاف فقہاء سے بچناہی اولی ہے۔ اورجن احادیث میں رسول اللہ  r کے خطبہ کے وقت کمان یاعصاتھامنے کاذکرہے تووہ کسی عذرکی وجہ سے ہے یا بیان جوازکے لئے ہے۔

امام اہلسنت امام احمدرضاخان علیہ الرحمہ فرماتے ہیں:" خطبہ میں عصا ہاتھ میں لینابعض  علماء نے سنت لکھا اور بعض نے مکروہ ،اور ظاہر ہے کہ اگر سنت بھی ہو تو کوئی سنت مؤکدہ نہیں، تو بنظرِ اختلاف اُس سے بچنا ہی بہتر ہے مگر جب کوئی عذر ہو، وَذَلِكَ لِأَنَّ الْفِعْلَ إِذَا تَرَدَّدَ بَيْنَ السُّنِّيَّةِ وَالْكَرَاْهَةِ كَاْنَ تَرْكُهُ أَوْلَى. وہ اس لئے کہ جب فعل کے سنت اور مکروہ ہونے میں شک ہو تو اس کا ترک بہتر ہوتا ہے۔[فتاوی رضویہ،ج:8، ص:303، رضافاؤنڈیشن لاہور]۔ واللہ تعالی اعلم ورسولہ اعلم بالصواب۔

  • رئیس دارالافتاء مفتی محمد اکرام المحسن فیضی

All Related

Comments