ضیائے صحابیات  

(سیّدہ )ماریہ( رضی اللہ عنہا)

ماریہ حضورِ اکرم صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کی خدمتگذار اور مثنیٰ بن صالح بن مہران مولی عمرو بن حریث کی دادی تھیں،ان سے اہل کوفہ نے صرف ایک حدیث روایت کی ہے،ابوبکر بن عیاش نے ،مثنی بن صالح بن مہران سے،انہوں نے اپنی دادی ماریہ سے روایت کی،کہ انہوں نے حضورِ اکرم کی ہتھیلی سے زیادہ نرم کسی چیز کو نہیں چھؤا،تینوں نے ذکرکیا ہے۔ ابوعمر لکھتے ہیں،میں نہیں کہہ سکتا،کہ یہ خاتون اول الذکر ہی ہیں یا کوئی اور ابونعیم لکھتے ہیں کہ ابن مندہ...

(سیّدہ )ماریہ( رضی اللہ عنہا)

ماریہ حضورِ اکرم صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کی خدمتگذار اور مثنیٰ بن صالح بن مہران مولی عمرو بن حریث کی دادی تھیں،ان سے اہل کوفہ نے صرف ایک حدیث روایت کی ہے،ابوبکر بن عیاش نے ،مثنی بن صالح بن مہران سے،انہوں نے اپنی دادی ماریہ سے روایت کی،کہ انہوں نے حضورِ اکرم کی ہتھیلی سے زیادہ نرم کسی چیز کو نہیں چھؤا،تینوں نے ذکرکیا ہے۔ ابوعمر لکھتے ہیں،میں نہیں کہہ سکتا،کہ یہ خاتون اول الذکر ہی ہیں یا کوئی اور ابونعیم لکھتے ہیں کہ ابن مندہ ...

(سیّدہ )ماریہ یاماویہ( رضی اللہ عنہا)

ماریہ یا ماویہ،یہ خاتون حجیر بن ابواہاب تمیمی کی آزاد کردہ تھیں،جن کے گھر میں خبیب بن عدی کو قید کیا گیا تھا،عبیداللہ بن احمد نے باسنادہ یونس سے انہوں نے ابنِ اسحاق سے ،انہوں نے ابن ابی نجیح سے،انہوں نے ماریہ سے روایت کی،کہ خبیب بن عدی ان کے گھر میں بند تھا،ایک دن انہوں نے اس کے ہاتھ میں انگوروں کا اس کے سر کے برابر ایک گچھادیکھا،جس سے وہ توڑ توڑ کر کھارہاتھا، حالانکہ اس زمانے میں عرب میں انگور کا ایک دانہ بھی دستیاب نہیں تھا،ابوعم...

(سیّدہ )مریم( رضی اللہ عنہا)

مریم مغالبہ جو ثابت بن قیس بن شماس کی زوجہ تھیں،یونس بن بکیر نے ابنِ اسحاق سے انہوں نے عبادہ بن ولید بن عبادہ بن صامت سے ،انہوں نے ربیع دختر معوذ سے روایت کی،کہ انہوں نے اپنے خاوند سے خلع کرلیا،چنانچہ حضرت عثمان نے انہیں حکم دیا،کہ وہ ایک حیض سے اپنے رحم کوصاف کرلے حضرت عثمان نے یہ حکم حضور ِ اکرم کے اس حکم سے اخذکیا،جو آپ نے مریم مغالبہ کواس وقت دیاتھاجب مریم نے اپنے خاوند کو فدیہ دے کر علیحدگی اختیار کرلی تھی،ابونعیم اور ابو موسی...

(سیّدہ )مسیکہ( رضی اللہ عنہا)

مسیکہ ،عبداللہ بن ابی منافق کی لونڈی تھیں،ان کے اور امیمہ کے بارے میں قرآن حکیم کی یہ آیت اتری،" لاتکرھوافتیاتکم علی البغاء "ان اور تم اپنی لونڈیوں کو بدکاری پر مجبور نہ کرو،یہ ابن ِمندہ کا قول ہے۔ ابومعاویہ نے اعمش سے،انہوں نے ابوسفیان سے انہوں نے جابر سے روایت کی،کہ امیمہ اور مسیکہ نے عبداللہ بن ابی کے خلاف حضورِ اکرم کے پاس شکایت کی،جس پر مذکورہ آیت نازل ہوئی۔ ابوالفضل بن ابوالحسن طبری فقیہ نے ابویعلی احمد بن علی س...

(سیّدہ )مسرہ( رضی اللہ عنہا)

مسرہ،ان کانام غبرہ تھا،حضورِ اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے بدل کر مسرہ کردیا،ان کا ذکر اس حدیث میں ہے،جسے زید بن انیسہ نے زہر ی سے مرسلاً روایت کیا،ابنِ مندہ اور ابونعیم نے ان کا ذکر کیا ہے۔ ...

(سیّدہ )معاذہ غفاریہ( رضی اللہ عنہا)

معاذہ غفاریہ،ابو موسیٰ نے کتابتہً ابوسعد بن عبداللہ معدانی سے،انہوں نے ابو حسین بن ابو قاسم سے،انہوں نے احمد بن موسیٰ سے،انہوں نے محمد بن علی سے،انہوں نے جعفر بن احمد بن رزین سے،انہوں نے یعقوب دورتی سے،انہوں نے یعلی بن عبید سے،انہوں نے حارثہ بن ابوالرجال سے،انہوں نے عمرہ سے روایت کی کہ انہیں معاذہ غفاریہ نے بتایاکہ میں ایک بار آپ کا ساتھ دینے کے لئے تاکہ مریضوں کی عیادت اور زخمیو ں کی مرہم پٹی کرسکوں،حضرت عائشہ کے حجرے میں حضور اکر...

(سیّدہ )نعم( رضی اللہ عنہا)

نعم شماس بن عثمان بن شرید مخزومی کی زوجہ تھیں،ایک روایت کے مطابق حسان کی بیٹی تھیں،ابنِ اسحاق نے ان کے شوہر کے سوگ میں ،جو غزوۂ احد میں مارے گئے تھے،ذیل کے اشعار کہے ہیں۔ (۱)یَاعَینٌ جَودِی بِدَمعٍ غَیر اِبسَاس عَلٰی کَرِیمِ مِنَ الفِتیَالِبَاسٖ (ترجمہ)اےآنکھ !آہستہ آہستہ آنسو،اس جواں مرد پر بہاؤ،جو جوانوں میں کثیراللباس تھا۔ (۲)صَعبُ البَدِیھَۃِ مَیمُونٌ نَقِیبَتَہٗ حَمَّال اَلوِیَہٗ رُکَابُ اُفرَاسٖ (ترجمہ...