منظومات  

نبی کا دیا سب خدا کا دیا ہے

تِرا نور عالم میں جلوہ نُما ہے اسی سے زمین و فلک منجلا ہے نجوم و کواکب میں شمس و قمر میں اُسی کی تجلّی، اُسی کی ضیاء ہے نبی اپنی امّت کے سردار تھے سب ہمارا نبی سیّد الانبیاء ہے رسالت رسولوں کی تھی ایک حد تک ہمارے نبی کی رسالت سِوا ہے نبی ہوتے آئے یکے بعد دیگر ہمارا نبی خاتم الانبیاء ہے ہم ہی ایک کیا سارا عالم ہے اُن کا خُدا کے وہ ہیں اور اُن کا خدا ہے مِلا، مِل رہا ہے، ملے گا اُن ہی سے نبی کا دیا، سب خدا کا دیا ہے چَلے سیر سبعِ سم...

تم لاکھ بشر اپنے کو کہو

اے سر و گلستانِ عالم، لاریب تو جانِ عالم ہے اے بزمِ عقیدت کے دولہا تجھ سے ہی شانِ عالم ہے جب آپ نہ تھے عالم بھی نہ تھا، خالق اِک کنزِ مخفی تھا جب آپ آئے عالم یہ ہوا! تو نور ظہوورِ عالم تھا اے شاہِ زمیں اے شاہِ زماں اے باعثِ خلق کون و مکاں کس چیز پہ تیرا حکم نہیں تو شاہِ شہانِ عالم ہے اے مرکز نقطۂ نونِ کُن، تجھ سے ہے محیط کون و مکاں رحمت کے خطوطِ واصل سے پیوستہ کمانِ عالم ہے اے مظہرِ اوّل ہرِّ خفی، اے منبعِ آخر، نورِ ہُدٰی ہے تو ہی پنہاں...

نور باطن دیکھنے کو قلب روشن چاہیئے

سعئِ قرب حق میں گر فوزاً عظیماً چاہیئے اتباعِ سید ِ اکرم، یقیناً چاہیئے کلمہ گوئی تو فقط اسلام کو کافی نہیں حبِّ احمد دل سے قولاً اور فعلاً چاہیئے تجھ کو اے زاہد مبارک قصرِ جنّت کا خیال بس ہمیں سرکار کے سائے میں مسکن چاہیئے آرزوئے اَحْسَنُ اللہ لَہٗ رِزْقاً تو ہے جذبۂ اخلاص بھی بروجہہِ احسن چاہیئے یوں تو ہر اِک تن، تن آسانی کا جویا ہے مگر راہِ مولا میں جو کام آجائے، وہ تن چاہیئے اُلفتِ سرکار کا دعویٰ تو کرتے ہیں سبھی کرسے سب قربان وہ ...

کعبہ بھی اس کا کعبہ ہے

سرکار کرم، آقائے نعم جو آپ کا بندہ ہوجائے دنیا کے جو بندہ پرور ہیں، وہ ان کا آقا ہو جائے ایمان کی دولت، دولت ہے، جو حشر میں کام آئیگی سرکار کی مہرِ محبت سے معمور خزانہ ہو جائے قبروں کی بھیانک تاریکی، محشر کے تپتے سُورج کا کیا حزن ہو اور کیوں خوف رہے جب لُطف تمہارا ہو جائے جب نور نے ان کو نور کیا اور ہاتھ میں ان کے نور دیا پھر نور سے کیا شے مخفی ہو، جب نور کا جلوہ ہو جائے یہ کتنا آسان نسخہ ہے اللہ کو راضی کرنے کا بس آپ کا بندہ بن جائے، م...

محبت میں ایسے قدم ڈگمگائے

خدا جس کو محبوب اپنا بنائے یہ بندہ بھی ان سے محبت جتائے نہ کام آئے گا صرف اللہ پہ ایماں وہ مومن ہے جو اُن پہ ایماں لائے اُسی نورِ رحمت نے دنیا میں آ کر نشاں ظلمتِ کُفر کے سب مٹائے نہیں اپنی اولاد سے کس کو اُلفت نہیں کون، دل جس کا دولت پہ آئے کسوٹی مگر سچّے ایماں کی یہ ہے ہر ایک چیز پر اُن کا حبّ غالب آئے   مناہی سے بچ کر اوامر پہ عامل خُدا کا جو ہو کے خودی کو مٹائے بڑا متقی وہ جو ہے اُن کا تابع محبت کا مرکز وہی بن کے آئے خدا...

تیری شہرت سن کے نجدی قبر میں حیراں ہے

نام تیرا یا نبی، میرا مفرّحِ جان ہے تیرے نام پاک سے دل میرا شاد ہر آن ہے یا نبی اللہ اب دیدار دکھلا دو ذرا ہجر میں اب تو تِرے بالکل یہ دل بے جان ہے جس گھڑی مشکل میں لیوے کوئی تیرا نامِ پاک یا رسول اللہ مشکل اس کی سب آسان ہے قرب میں اپنے جگہ دی تیرے ربِّ پاک نے واسطہ آدم نے چاہا یہ تو تیری شان ہے نام کی تیرے ذرا کوئی بے ادبی کرے دین کا اس کے سراسر حشر تک نقصان ہے عرش تا فرش شہرت ہے تِرے ہی نام کی تیری شہرت سُن کے نجدی قبر میں حیران ہے...

سارے عالم میں ہلچل یہ ہونے لگی آج تشریف لاتا ہے ایسا نبی

سارے عالم میں ہلچل یہ ہونے لگی آج تشریف لاتا ہے ایسا نبی آرزو مند تھا جس کا  ہر اِک نبی، جس کی پھیلی ضیاء آج کی رات ہے کُھل گیا آج عقدۂ والضحیٰ، راز و وَاللَّیل کا آج افشا ہوا آج صبح ولادت ہوئی رُونما، شب میں شب ِ بے بہا آج کی رات ہے شانِ واللَّیل جس لیل میں ہے عیاں، ہوئے اس میں پیدا شہِ انس جاں صبح جس کی کہ صبحِ ولادت ہوئی، وہ شب ِ پُر ضیاء آج کی رات ہے رحمتِ عالمیں جلوہ فرما ہوا، موج زن آج ہے بحرِ جود و سخا مانگ لو جس کو جو کچھ بھی...

سبز گنبد کے مکیں میری مدد فرمائیے

سرورِ دنیا و دیں میری مدد فرمائیے رحمت للّعالمیں میری مدد فرمائیے عاصی و خاطی سہی، نادم ہے برہاںؔ آپ کا یا شفیع المذنبیں میری مدد فرمائیے کشتئ مسلم تلاطم میں پھنسی فریاد ہے یاانیس المسلمیں میری مدد فرمائیے مومن ناچار پر ہے اژدھامِ بے کسی یا معین المؤمنیں میری مدد فرمائیے ظلمتوں کا ہے تسلّط، پُر خطر ہے راستہ اے سراج السالکیں میری مدد فرمائیے میرے اعمالِ سیہ، پھر قبر کی ظلمت غضب نور انور، مہ جبیں میری مدد فرمائیے حُسنِ نور افروز سے عا...

سلام بحضور کونین ﷺ

حضور سیّد خیر الوریٰ سلام علیک بارگاہِ شفیع الوریٰ سلام علیک روم بسوئے تو بر ہر قدم، کنم سجدہ نوائے قلب شود سیّدا سلام علیک بجز درت نکشایم بہ ہیچ در بستیم توئیست قبلۂ حاجاتِ ما سلام علیک عَطَاکَ عَمَّ عَلیٰ کُلِّ ذَرَّۃٍ فَامْطَرْ عَلَیَّ غَیْثَ عَطَا مِنْ عَطَا سَلَامٌ عَلَیْک بِنُوْرٍ عِلْمِکَ لَاحَتْ کُنُوْزِ تَحْقِیْقُ بِمَنَ نَظَرُ بِمَرحْمَتِ رَضَا سَلَامٌ عَلَیْک بہ احمدے کہ رضایش ہنہ رضائے خدا است بگو زمن بصلاۃ اے صبا سلام علی...

درود اور بے شمار درود

صَلِّ عَلیٰ نَبِیِّنَا صَلِّ عَلیٰ مُحَمَّدٍ صَلِّ عَلیٰ حَبِیْبِنَا صَلِّ عَلیٰ مُحَمَّدٍ صَلِّ عَلیٰ شَفِیْعِنَا صَلِّ عَلیٰ مُحَمَّدٍ آگئے وہ کہ جن سے ہے، جلوۂ دو جہاں عیاں آگئے وہ کہ جن میں تھا، جلوۂ دو جہاں نہاں آگئے وہ کہ عظمتیں جن کی نہ ہو سکیں بیاں صَلِّ عَلیٰ نَبِیِّنَا صَلِّ عَلیٰ مُحَمَّدٍ صَلِّ عَلیٰ حَبِیْبِنَا صَلِّ عَلیٰ مُحَمَّدٍ صَلِّ عَلیٰ شَفِیْعِنَا صَلِّ عَلیٰ مُحَمَّدٍ شمس و قمر شجر حجر، جنّ و ملک، زمیں فلک جنّ و بشر، ز...