یا رسول اللہﷺ یا خیر الانامﷺ

یا رسول اللہﷺ یا خیر الانامﷺ

دور افتادہ کا اب لیجے سلام

 

زیب و زینِ عرشِ رحماں السلام

نکہت و طیبِ گلستاں السلام

 

اے قرار بے قراراں السلام

چارہ سازِ دلفگاراں السلام

 

اے شہنشاہِ مدینہ السلام

اے قرارِ قلب و سینہ السلام

 

جانِ جاں و جانِ ایماں السلام

اے شفیع اہلِ عصیاں السلام

 

مہبط وحی و سکینہ السلام

غیب دان و غیب بینا السلام

 

اے خدا کو دیکھنے والے نبی

کون سی شے تجھ سے عالم میں چھپی

 

کیجئے اپنے کرم سے صورتِ عیش دوام

یا رسول اللہا عطا ہو خلد طیبہ میں مقام

 

بے ٹھکانوں کو ٹھکانہ دیجئے

بسترِ خاک مدینہ دیجئے

 

تو تو واقف ہے مرے احوال سے

کیا غرض پھر مجھ کو عرضِ حال سے

 

کام بندوں کا ہے عرض مدعا

یوں لبوں پر مقصد دل آگیا

 

دفع طیبہ سے ہو یہ نجدی بلا

یا رسول اللہ عجل بالجلاء

 

یا رسول اللہ بہر فاطمہ

اپنے اخترؔ کو مدینہ میں گما

٭…٭…٭


متعلقہ

تجویزوآراء