جس کے باعث ہوئے جہاں روشن

جس کے باعث ہوئے جہاں روشن
اور خورشید و آسماں روشن

مشرق و مغرب و جنوب وشمال
دین احمد سے ہرمکان روشن

خوبی حسن مصطفائی سے۔
حسن خوبی کا گلستان روشن

ہے فروغ جمال احمد سے
فخر ہستی کا تابدان روشن

شب اسرا میں اُن کے قدموں سے
ہوگیا گلشن جہاں روشن

ہیں وہ شرع شریعت نبوی
جس سے ہے بزم انس و جان روشن

نعتِ اوصاف مصطفی میں رہے
یا الہٰی میری زبان روشن

بحر دیگر میں لکھ غزل کاؔفی
ہوئے تا روح اور روان روشن
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔(دیوانِ کافؔی)


متعلقہ

تجویزوآراء