ضیائی اقوال زریں  

ملفوظات امام حسین

ملفوظات امام حسین رضی اللہ عنہ جس کی طاقت نہ ہو اس کے لئے تکلف نہ کرجس کو پا نہ سکے۔ اس کے پیچھے نہ پڑ جس پر قدرت نہ ہو۔ خرچ اتنا کر جس سے تو مستفید ہو سکے۔ اجرت نہ مانگ مگر جس قدر تو نے کام کیا ۔ خوش نہ ہو مگر اس پر جو تجھے اللہ تعالیٰ کی طاعت سے میسر ہوا۔ کسی چیز کو حاصل نہ کر مگر جس کا تو اپنے آپ کو اہل پائے۔ بادشاہوں کی خصلتوں سے بری خصلت دشمنوں کے ساتھ نرمی اور کمزوروں پر سختی اور دینے میں بخل ہے۔ بے شک لوگ دولت کے غلام ہیں اور ان...

حضرت مخدوم سیداشرف جہانگیرسمنانی

ملفوظات حضرت مخدوم سیداشرف جہانگیرسمنانی رحمۃ اللہ علیہ یعنی خداکوایک جاننایہ ہے کہ عاشق معشوق کی صفات میں فناہوجائے۔ جب سالک عقائدواصطلاح صوفیہ سے واقف ہوگیاتواس کےلئےضروری ہےکہ زیادہ وقت محفل توحیدمیں صرف کرےاورمثل بگلےکےبیٹھارہے"آپ سےپوچھاگیاکہ بگلےکی طرح بیٹھنےسےکیا مطلب ہے۔ آپ نےجواب دیا۔ "بغیرتلاش کےپانا،بغیردیکھےہوئےدیدارہوجانا۔ ولایت وہ ہے کہ بندہ فناکےبعدقاسم اورباقی رہےاورتمکین وصفاسےموصوف ہو۔ بعض لوگوں کایہ خیال ہےکہ نوافل پڑھن...

ملفوظات حضرت خواجہ فرید الدین مسعود گنج شکر

ملفوظات حضرت خواجہ فرید الدین مسعود گنج شکر فرمایا۔ اے درویش! اگر آپ کو خرقہ پہننے کا شوق ہے۔ تو خدا وند کریم جل و علا کی رضا ے لئے پہنیں۔ مخلوق خدا کو دکھانے کے لیے نہیں کہ وہ آپ کی عزت کریں۔ ایسا نہ ہو کہ قیامت کے دن آپ مصیبت میں گرفتار ہو جائیں۔ فرمایا فقراء اہل عشق ہیں اور علماء اہل عقل ہیں۔ اسی لئے ان میں تضاد ہے۔ اس لئے ایسے گردہ سے وابستگی پیدا کر جس میں عشق و عقل ہر دو موجود ہوں۔ یہ گروہ انبیاء کا ہے۔ راہ سلوک میں عشق فقراء عقل علماء ...

ملفوظات حضرت خواجہ حسن بصری

ملفوظات حضرت خواجہ حسن بصری رحمۃ اللہ علیہ آپ مناجات فرمایا کرتے تھے کہ ’’الٰہی تو نے مجھے نعمت دی میں اس کا شکر بجا نہ لایا، اور تو نے بَلا بھیجی میں نے اُس پر صبر نہ کیا، پس تو نے اِس سبب سے کہ میں نے شکر نہ کیا، اپنی دی ہوئی نعمت مجھ سے واپس نہ لی، اور اس سبب سے کہ میں نے صبر نہ کیا تو نے بَلا کو ہمیشہ کے لیے مجھ پر مسلط نہیں رکھا، الٰہی تجھ سے سوائے فضل و کرم کے اور کچھ ظاہر نہیں ہوتا۔ فرمایا۔ کُل صحیفے ایک سو چار (104) کی تعداد ...

ملفوظات حضرت معروف کرخی

ملفوظات حضرت معروف کرخی رحمۃ اللہ علیہ فرمایا جوانمردی تین باتوں میں ہے، ایک وفائے بے خلاف، دوسری ستایش بے جود، تیسری عطائے بے سوال۔ فرمایا علامت اللہ تعالیٰ کی گرفت کی یہ ہے کہ وہ بندے کو نفس کے کام میں مشغول کرتا ہے کہ وہ اس کے کام نہ آوے۔ فرمایا علامت خدا کے دوستوں کی یہ ہے کہ ان کی فکر خدا ہی میں ہوتی ہے، اور ان کو قرار خدا ہی سے ہوتا ہے، اور ان کا شغل خدا ہی کی راہ میں ہوتا ہے۔ فرمایا حق تعالیٰ جب بندہ کی بھلائی چاہتا ہے تو عمل کا دروازہ اُ...