ضیائی اقوال زریں  

بیٹا! مولوی ہوتو ایسا

بیٹا! مولوی ہوتو ایسا ساتھ ہی ایک اور واقعہ سنایا ’’کسی موقع پر بمبئی سےا یک شخص اعلیٰ حضرت رحمۃ اللہ علیہ کے پاس آیا۔ قدموں میں گرگیا۔ مہربانی فرماکر ہمارے یہاں قدم رنجا فرمائیں۔ بہت اصرار کے بعد اعلیٰ حضرت رحمۃ اللہ علیہ راضی ہوئے۔ بمبئی کے لئے ارادہ فرمایا۔ ابھی حضرت اس کی گاڑی میں تشریف رکھے ہی تھے کہ اس شخص نے اپنی خوشی میں یا کسی وجہ سے یہ کہہ دیا۔ ’’اب تو آپ کی ساری کتابیں چھپ جائیں گی‘‘۔ اعلیٰ حضرت ر...

مولوی ہوتو ایسا

مولوی ہوتو ایسا جب میں دارالعلوم امجدیہ کراچی میں درجہ سادسہ کا طالب علم تھا پیارے پیرو مرشد نے مجھے یہ نصحیت فرمائی۔ ’’ایک مرتبہ اعلیٰ حضرت رحمۃ اللہ علیہ کے پاس کوئی مٹھائی کا ڈبہ لایا۔ اعلیٰ حضرت رحمۃ اللہ علیہ نے فرمایا، کوئی کام، اس نے کہا، نہیں، پھر پوچھا کوئی کام، اس نے کہا نہیں، اعلیٰ حضرت رحمۃ اللہ علیہ نے کسی خادم سے فرمایا کہ اچھا ڈبہ  اندر بھیج دو۔ کچھ دیر بعد وہ شخص کہتاہے حضرت تعویذ درکارہے! اعلیٰ حضرت رحمۃ اللہ ...

کہیں پر جاؤ شریعت کی پابندی کرو

کہیں پر جاؤ شریعت کی پابندی کرو ’’بعض عورتیں جن کے یہاں دستانے سے ہاتھ نہیں نکلتے۔ باہر ملکوں میں معلوم ہوا کہ جینس کی پتلون اور اوپر شرٹ پہنتی ہیں۔ آدمی جہاں بھی جائے اللہ سے ڈرے شریعت کی پابندی کرے۔ ہم باہر جاتے ہیں تواپنے اسی جبے  اور شیروانی کو استعمال کرتے ہیں اگرا یسانہ کروں  توکیا وہ مجھے ائیر پورٹ سے باہر کردیتے ہیں؟‘‘...

مقرر کس بات کا خیال رکھے

مُقَرّر کس بات کا خیال رکھے: ’’اچھا مقرر وہ ہے جو اپنے موضوع پر گفتگوکرے، بعض حضرات تقریرکے دوران کبھی کہاں کبھی کہاں چلے جاتے ہیں۔ مجھے غزالی  زماں حضرت علامہ سید احمد سعید کاظمی علیہ الرحمہ کی تقریر بہت پسند تھی۔ وہ ایک ایک لفظ پر گھنٹوں تقریر کرتے۔اس طرح حضرت علامہ شفیع اوکاڑوی علیہ الرحمہ  بھی ایک ہی موضوع پر گفتگو کرتے‘‘۔...

ناقابلِ اشتراک فضائل

حضور اقدسﷺ کے بہت فضائل جلیلہ وخصائص کریمہ ناقابلِ اشتراک ہیں جیسے افضل الانبیاء..... خاتم النبیین.....سیّد المرسلین..... اول خلق اللہ..... افضل خلق اللہ..... اول شافع..... اول مشفع..... نبی الانبیاء ﷺ۔[1]   [1]۔ فتاویٰ رضویہ جلد ۲۹، صفحہ ۲۲۱۔...

شان جباری کا ظہور

شان جباری کا ظہور جباری کی صفت کے دیکھنے سے مقصود تضّرع و زاری اور توبہ و انابت کی صفت کا ظہور ہے۔ اور اس دید کی صحت کی نشانی مناجات کی طرف مائل ہونا ہے۔ نہ کہ خرابات (بت خانہ)۔ یعنی اپنے نفس کی طرف ۔ فَاَلْھَمَھَا فُجُوْرَھَا وَتَقْوٰھَا۔ (سورۃ شمس) پس جی میں ڈالی اُس کے بدکاری اُس کی اور پرہیز گاری اُس کی۔  اِس میں حکمت یہ ہے کہ جب رضا کا ارادہ میلان دیکھے تو شکر کرے اور اُسی پر چلے۔ اور جب عدم رضا کا ارادہ و میلان دیکھے تو تضرع کرے اور حق...

ملفوظات حضرت خواجہ خدا بخش ملتانی ثم خیر پوری

ملفوظات حضرت خواجہ خدا بخش ملتانی ثم خیر پوری اللہ تعالیٰ کی بارگاہ میں کبھی کوئی آیا، کبھی کوئی آیا، تو کبھی کوئی۔(غرض یہ کہ کسی بقا نہیں ) اسی لئے اللہ تعالیٰ کے لطف وقہر سے کبھی بے پروا نہیں ہونا چاہئے۔ اے بادشاہ! موت کا راستہ کیسا ہموار ہے، ہر شخص اس پر آنکھیں بند کرکے چلتا ہے۔ اہل اللہ چھوٹے چھوٹے تنکوں کی وجہ سےجبینِ نیاز پر بل نہیں ڈالتے،دریا دل (آنکھ کی )پتلی کے پانی کی مثل سکون میں رہتے ہیں۔ سحری کے وقت بیدار ہوکربے ریا ذکر کرو،اس طر...