قربانی اور عقیقہ کے مسائل  

قربانی کے جانوروں کی اقسام

السلام علیکم  مفتی صاحب! وہ کون کون سے جانور ہیں  جن کی قربانی جائز ہے  اور ان کی عمر کتنی ہو نی چاہیے؟ سائل: فاروق احمد کھتری نیو کراچی الجواب بعون الملک الوہاب حضرت علامہ مفتی جلال الدین احمد امجدی علیہ الرحمۃ  فرماتے ہیں:"   قربانی  کے مندرجہ بالا جانور ہیں جن کی قربانی جائز ہے۔اونٹ،گائے، بھینس، بکری، بھیڑ اور دنبہ۔ اونٹ پانچ سال کا ہونا ضروری ہے۔ گائے بھینس دو سال کی اور بکر ی،بکرا ایک سال  کا ہونا ضرور...

بھینسے کی قربانی کا حکم

السلام علیکم مفتی صاحب! ایک شخص جو کہ عالم دین بھی ہے اور وہ کہتا ہے کہ بھینسے کی قربانی قرآن وحدیث سے ثابت نہیں۔جو لوگ بھینسے کی قربانی کرتے ہیں۔ وہ جہالت ہے۔اب پوچھنا یہ ہے کہ کیا یہ بات صحیح ہے یا نہیں۔؟برائے کرم اس کا جواب قرآن و حدیث کی روشنی میں عنایت فرمائیں۔جزاک اللہ۔               سائل: محمد ندیم صابری جامپور الجواب بعون الملک الوہاب فتاوٰی فیض رسول میں حضرت علامہ مفتی...

بکرے کے دانت کے نکلنے پر  قربانی کا حکم

السلام علیکم مفتی صاحب!قربانی کے بکرا سال بھر کا ہے اور اس کا دانت بھی نکلا ہو ا ہے۔ اور جبکہ گاؤ ں کے لوگ کہتے ہیں کہ سال بھر کا نہیں ہے۔تو کیا اس بکرے کی قربانی ہو جائے گی؟  سائل: فیاض احمد عطاری داجل ضلع راجنپور الجواب بعون الملک الوہاب فتاویٰ فیض رسول میں ہے:"  قربانی کے بکرے کی عمر سال بھرہونا ضروری ہے۔  دانت کا نکلنا ضروری نہیں۔ لہذا بکرا اگر واقعی سال بھر کا ہے۔ تو اس کی قربانی جائز ہے۔ اگرچہ اس کے دانت نہ نکلے ہوں"۔  و...

غیر مسلم کو قربانی کا گوشت دینا

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ مفتی صاحب! میرا سوال آپ سے یہ ہے کہ کسی کافر کو قربانی کا گوشت دینا جائز ہے یا نہیں؟اگر کسی نے دیا تو اس کی قربانی کا کیا حکم ہے؟     سائل:محمد شعیب بھٹی گوجرانوالہ الجواب بعون الملک الوہاب قربانی کو گوشت کافر کو دینا شرعاً جائز نہیں  اور کسی نے دیا تو وہ گنہگار ہے اور وہ توبہ کرے۔ اور قربانی ہو جائے گی   یعنی کافر کو گوشت دینے  کے سبب قربانی کا اعادہ واجب نہیں۔ واللہ تعالیٰ ...

عضو کٹے جانور کی قربانی کا حکم

السلام علیکم مفتی صاحب! ایک سوال جو ہمیشہ میرے ذہن  میں گونجتا رہتا ہے کہ جس جانور کا کوئی عضو تہائی حصہ سے زیادہ کٹا ہوا ہو اس کی قربانی جائز نہیں۔ تو خصی جانور جس کے پورے خصیے  کٹے ہوتے ہیں۔ اس کی قربانی کیسے جائز ہے؟ سائل:محمد رمضان چشتی ضلع خوشاب الجواب بعون الملک الوہاب حضرت علامہ مفتی جلال الدین احمد امجدی علیہ الرحمۃ  فرماتے ہیں کہ خصی جانور جس کے پورے خصیے کٹے ہوتے ہیں۔ اس کی قربانی جائز ہے۔ اور صحیح روایت سے ثابت ہے کہ نبی...

حضرت اسماعیل علیہ السلام کی جگہ قربان ہونے والا دنبہ

السلام علیکم مفتی صاحب!میرا سوال یہ ہے کہ جو دنبہ حضرت اسماعیل علیہ السلام کی جگہ قربان ہو ا تھا وہ حضرت جبرائیل علیہ السلام جنت سے لیکر آئے تھے ۔ تو وہ دنبہ جنت میں کہاں سے آیا؟ اور جب اس کی قربانی ہو گئی تو اس کا گوشت اور کھال کا کیا ہوا؟جواب عنایت فر مادیں۔  سائل: غلام حسین قادری وادئی سون سکیسر الجواب بعون الملك الوهاب فتاویٰ قاضی خان میں ہے کہ  جو مینڈھا حضرت اسماعیل علیہ السلام کے فدیہ میں حضرت ابراہیم علیہ السلام نے ذبح فر...

قصائی کو قربانی کے جانور کے اعضاء دینے کا حکم

السلام علیکم مفتی صاحب! کیا فرماتے ہیں مفتیان کرام اس مسئلہ کے بارے میں کہ قصائی کو سری یا کوئی اعضا  دیےجاسکتے ہیں یا نہیں؟ اور مستحق کون ہے؟  سائل:محمد کاشف سیفی ضلع نیلم آزاد کشمیر الجواب بعون الملك الوهاب قربانی کی کھال یا گوشت یا سری پائے قصاب یا ذبح کرنے والے کو اجرت میں دینا جائز نہیں۔ سری یا پائے خود کھائے یا کسی دوسرے کو بطور ہدیہ دیدے۔ شرعاً اس کا کوئی حقدار نہیں۔ اور یہ جو ذبح کرنے والوں نے مشہور کر رکھا ہے کہ سر ہمارا حق ہے...

قربانی کی دعا کوئی اور پڑھے تو؟

السلام  علیکم مفتی صاحب! کیا فرماتے ہیں علماء کرام اس مسئلہ کے بارے میں کہ ایک مسلمان جانور ذبح کر رہا ہو اور دوسرا مسلمان ذبح کی دعا پڑھ رہا ہوتو کیا اس صورت میں قربانی ہو جائے گی؟             سائل:محمد طاہر نقشبندی برمنگھم الجواب بعون الملك الوهاب قربانی کرنے والے کو بسم اللہ  اللہ اکبر پڑھنا ضروری ہے۔ قربانی کی دعا پڑھنا ضروری نہیں۔ لہذا اگر کسی دوسرے نے اس کی دعا پڑھی تو بھی قرب...

قربانی کی کھال کی قیمت مسجد پر لگانا

السلام علیکم مفتی صاحب! میں نے آپ سے یہ سوال پوچھنا ہے کہ کیا ہم قربانی کی کھال  بیچ کر اس کی قیمت  مسجد  کی تعمیر میں براہ   راست  لگا سکتے ہیں یا نہیں؟ سائل: محمد عبد اللہ ناصر گلگت بلتستان الجواب بعون الملك الوهاب فتاوٰ ی فیض رسول میں ہے:"  مسجد میں صرف کرنےکی نیت سے قربانی کی کھال فروخٹ کر کے اس کی قیمت براہ راست مسجد کی تعمیر میں لگانا جائز ہے "۔ [فتاویٰ فیض رسول ،جلد دوم ،کتاب الاضحیہ،ص 471-472، شبیر براد...

بڑے جانور میں ہر شخص کا مکمل ایک حصہ ہونا ضروری ہے

کیا فرماتے ہیں علماء کرام اس مسئلہ کے بارے میں کہ 3، 5 یا 7 شخص مل کر اونٹ گائے وغیرہ میں قربانی کرسکتے ہیں اور ایک جانور میں  پیسے سب پر برابر تقسیم کیئے جائیں گے۔ کیا یہ صورت جائز ہے؟ سائل:نصیر الدین بہاری  بہار انڈیا الجواب بعون الملك الوهاب فتاویٰ امجدیہ میں ہے:"  گا ئے اونٹ میں  سات شخص شریک ہو سکتے ہیں۔ یعنی ایک گائے کے سات  مساوی حصہ ہو سکتے ہیں سات حصے کرنا ضروری نہیں۔  سات سے کم ہوں تو قربانی ہی نہ ہو اگر دو...