قربانی اور عقیقہ کے مسائل  

قربانی کی کھال مسجد کی تعمیر کیلئے دینے کا حکم؟

کیافرماتے ہیں علماء دین اس مسئلہ کے بارے میں کہ قربانی کی کھال کی رقم مسجد کی تعمیر پر خرچ کی جاسکتی ہے یانہیں؟ الجواب بعون الملك الوهاب قربانی کی کھال كو مسجدکی تعمیراور دیگر ہر نیک اور جائز کام میں خرچ کیا جاسکتا ہے اورمسجد کی تعمیر یا مسجد کے دیگر اخراجات بھی نیک کا م ہیں ان میں بھی بغیر حیلہ کے لگانا جائز ہے۔ فتاوی عالمگیری میں ہے: " يَتَصَدَّقُ بِجِلْدِهَا أَوْ يَعْمَلُ مِنْهُ نَحْوَ غِرْبَالٍ وَجِرَابٍ" .   ترجمہ: قربانی کے جانو...

جانور کا کان 2 انچ کٹا ہو تو قربانی کا حکم

ہم نے ایک قربانی کا جانور خریدا۔ مسئلہ یہ ہے اس کے کان پر ۲ انچ کا کٹ ہے۔ ہمیں راہنمائی فرمائیں کہ یہ جانور قربانی کے لیے اہل ہے یا نہیں؟ (شکیل اختر،جہلم)الجواب بعون الملك الوهاب اگر کان تہائی یا اس سے کم کٹا ہوا ہے تو اس كی قربانی جائز ہے۔ اور اگر تہائی سے زیادہ کٹا ہوا ہے تو اس کی قربانی ناجائز ہے۔ حوالہ: بہار شریعت، جلد3، صفحہ341، مکتبہ المدینہ کراچی۔...

عقیقہ کا گوشت کون استعمال کرسکتا ہے؟

عقیقہ کے بارے میں تفصیل بتادیں کہ کیا عقیقہ کا گوشت سارا بانٹنا ہوتا ہے یا رکھ بھی سکتے ہیں؟ (سدرہ رانا)الجواب بعون الملك الوهاب عقیقہ کے گوشت کے تین حصے کریں ایک حصہ فقرا کا ایک احباب کا اور ایک حصہ گھر والے کھائیں۔  حوالہ: بہار شریعت، جلد3، حصہ15، صفحہ357،  مکتبہ المدینہ کراچی۔...

گردن کا چوتھائی حصہ کٹا مگر حلقوم نہ کٹا تو کیا جانور حلال ہے؟

کیا فرماتے ہیں علماء کرام اس مسئلہ کے بارے میں ایک بکرا جو قریب المرگ تھا اس کے ذبح کرنے میں اس کی گردن کا چوتھائی حصہ کٹا ہے۔مگر حلقوم تک نہ کٹا ،  کچھ خون بھی گرا، تو کیا وہ جانور حلال ہے یا حرام؟  سائل:محمد مزمل عطاری کراچی الجواب بعون الملک الوہاب جو رگیں ذبح میں کاٹی جاتی ہیں وہ چار ہیں۔اول: حلقوم ،یہ رگ ہے جس میں سانس آتی جاتی ہے۔دوم:مری،اس رگ سے کھانا پانی اترتا ہے اور ان دونوں کے اغل بغل اور دو رگیں ہیں جن میں خون کی روانی ہوتی ...

مذبوحہ جانور کے پیٹ سے بچہ نکلے تو اس کا کیاحکم ہے؟

السلام علیکم مفتی صاحب ! میرا سوال  یہ ہے کہ بکری ذبح کی گئی اور اس بکری کا بچہ پیدا ہو گیا  زندہ یا مردہ تو وہ جانو ر حلال کی حیثیت رکھتا ہے یا  حرام کی؟اور اس بکری کے بچہ کا کیا کیا جائے؟ برائے مہربانی آگاہ فرما دیں۔سائل:محمد نعمان خان اوچھالی شریف الجواب بعون الملک الوہاب حضرت علامہ مفتی جلال الدین احمد امجدی علیہ الرحمۃ  فرماتے ہیں:" جس بکری کے پیٹ سے بچہ نکلے خواہ زندہ ہو یا مردہ اگر وہ شرعی طریقہ پر ذبح کی گئی ہے تو اس ب...

حلال جانوروں کی کونسی چیزیں کھانا حرام ہیں

السلام علیکم مفتی صاحب،حلال جانوروں کی کون کونسی چیزیں جن کا کھانا جائز نہیں ؟سائل: حسن خان  سعیدی ملتان الجواب بعون الملک الوہاب حلال جانور کے  ذبیحہ میں درج ذیل چیزوں کا کھانا جائز نہیں۔ ۱:خصیہ،۲۔فرج یعنی علامت مادہ،۳۔ذکر یعنی علامت نر،۴:پاخانہ مقام،۵:رگوں کا خون،۶:گوشت کا خون جو کہ بعد ذبح گوشت میں سے نکلتا ہے،۷:دل کا خون،۸:جگر کا خون،۹:طحال کا خون،۱۰:پتہ،۱۱:پت یعنی وہ زرد پانی جو پتہ سے نکلتا ہے۔۱۲:مثانہ یعنی پھنکنا،۱۳:غدود،۱۴:حرام ...

کیا ذابح کے مددگار پر بسم اللہ پڑھنا ضروری ہے؟

سوال آپ سے پوچھنا یہ ہے کہ  ذبح کرنے والے کی جو مدد کررہا ہوتا ہے اور چھری کوبھی پکڑے ہوئے تو کیا اس ضروری ہے کہ وہ بھی  بسم اللہ  اللہ اکبر پڑھے؟ سائل:طارق سیف الرحمٰن ڈیرہ غازی خان الجواب بعون الملك الوهاب فتاوٰ ی امجدیہ میں ہے :"بیشک معین(مدد کرنے والا) ذابح پر تسمیہ واجب ہے۔مگر معین ذابح سے مراد وہ شخص ہے کہ چھری چلانے میں اس کا مدد گار ہو کہ اس صورت میں دونوں نے ملکر ذبح کیا ۔ اور اگر  ایک نے جان بوجھ کر بسم اللہ  ...

ذبح کے دوران جانور کا سر تن سے جدا ہوگیا تو ؟

السلام علیکم مفتی صاحب! میرا سوال یہ ہے کہ اگر جانور  ذبح کرتے وقت جا نور کا  سر  جدا ہو جائے تو اس کا کھانا کیسا ہے ؟ سائل: محمد سلمان لیاقت آباد کراچی الجواب بعون الملك الوهاب حضرت علامہ مفتی محمد امجدعلی اعظمی قدس سرہ العزیز فتاویٰ امجدیہ میں فرماتے ہیں:" قصداًایسا کرنا مکروہ ہے  بلکہ حرام مغز تک چھری کو پھیرا دینا مکروہ ہے مگر وہ جانور حرام نہ ہو گا۔ اس کا کھانا حلا ل ہے۔  اور بلا قصد گردن کٹ گئی تو حرج نہیں ۔ مجمع ا...

عورت کےذبیحہ کا کیا حکم ہے؟

السلام علیکم مفتی صاحب! کیا فرماتے ہیں مفتیان کرام اس مسئلہ کے بارے میں کہ اگر کسی جانور کو عورت ذبح کر دے تو اس کا کیا حکم ہے؟ برائے مہربانی اس کا جواب عنایت فرمائیں۔  سائل: قاری مراد علی  عمر کوٹ ضلع تھر پارکر الجواب بعون الملك الوهاب عورت کےہاتھ کا ذبیحہ کھانا جائز ہے۔ فتاویٰ عالمگیر میں ہے: " المراۃ المسلمۃ والکتابیۃ فی الذبح  کالرجل " مجمع الانہر میں ہےکہ: "ولو کان الذابح امراۃ او صبیا او مجنونا یعقلان حل الذبیحۃ بالتسمیۃ" ...

عقدہ کے اوپر ذبح کرنے کا حکم

السلام  علیکم مفتی صاحب! آپ سے یہ سوال کرنا ہے کہ اگر ذبح اعلیٰ الحلق فوق العقدہ ہو تو کیا عند الاحناف جائز ہے یا نہیں؟ سائل:محمد جعفر حیدر آباد انڈیا الجواب بعون الملك الوهاب حضرت علامہ مفتی محمد امجدعلی اعظمی قدس سرہ العزیز  فتاویٰ امجدیہ میں فرماتے ہیں:"اگر چاروں رگوں میں تین رگیں کٹ گئیں ذبح  ہو گیا ۔ اگرچہ فوق العقدہ ہو کہ حدیث میں مقام ذبح مابین اللبہ واللحیین " فرمایا گیا ینز مبسوط میں یہ فرمایا الذبح ما بین اللبۃ ...