ضیائے فقہ  

وضو کا طریقہ

۱۔ بسم اللہ الرحمن الرحیم یا بسم اللہ والحمدللہ کہیں۔(سنت) ۲۔ دونوں ہاتھ گٹوں تک تین بار دھوئیں اور ہاتھوں کی انگلیوں کا خلال کریں۔ (سنت) ۳۔ کم از کم تین مرتبہ داہنے بائیں، اوپر نیچے کے دانتوں پر مسواک کریں۔(سنت) ۴۔ ہر مرتبہ مسواک کو دھو لیں۔ مسواک دانتوں کی چوڑائی میں کریں، لمبائی میں نہیں۔ ۵۔ تین بار خوب اچھی طرح کلی کریں کہ حلق تک، دانتوں کی جڑ اور زبان کے نیچے تک پانی بہے۔(سنت) ۶۔ اگر روزہ دار نہ ہوتو غرغرہ بھی کریں۔(سنت) ۷۔ تین بار دائیں ہات...

مسواک کرنے کا طریقہ

مسواک شریف کرنے کا طریقہ یہ ہے کہ: سب سے پہلے مسواک کو دھولے۔ اُس کے بعد پہلے دائیں جانب اُوپر کے دانتوں کو صاف کرے۔ اس کے بعد بائیں جانب کے اوپر کے دانتوں کو صاف کرے۔ پھر دائیں جانب کے نیچے کے دانت صاف کرے۔ اس کے بعد بائیں جانب کے نیچے کے دانتوں کی صفائی کرے۔ اس طرح دائیں، بائیں اوپر نیچے کے دانتوں کی تین تین مرتبہ صفائی کرے۔ اور ہر مرتبہ مسواک کو دھولے۔ مسواک نہ بہت نرم اور نہ بہت سخت ہو بلکہ ریشہ دار ہو۔ مسواک داہنے ہاتھ سے کرے اور اس طرح کہ چ...

غسل کا طریقہ

۱۔ غسل کی نیت کرے۔ ۲۔ دونوں ہاتھ گٹوں تک دھوئے۔ ۳۔ استنجا کی جگہ دھوئے اور اگر کسی عضو پر نجاست لگی ہو تو اسے بھی دھوئے۔ ۴۔ نماز کے جیسا وضو کرے مگر پاؤں نہ دھوئے لیکن اگر اونچی جگہ بیٹھا ہو تو پاؤں بھی دھو لے۔ ۵۔ پورے بدن پر تیل کی طرح پانی چپڑ(مل) لے۔ ۶۔ تین مرتبہ دائیں کندھے پرپھرتین مرتبہ بائیں کندھے، پھر سر پر اور پھر پورے بدن پراچھی طرح پانی بہائے کہ بال برابر جگہ بھی خشک نہ رہ جائے ورنہ غسل نہیں ہوگا۔ ۷۔ اب نہانے کی جگہ سے الگ ہوجائے اور ا...

مسواک کے آداب

۱۔         مسواک سنّت ہے، ہمارے نبیﷺ اور تمام انبیاءِ کرام جو آپ سے پہلے گزرے ہیں ان کی سنّت اور پاکیزہ عادات میں سے ہے۔ علامہ شامی نے وضو میں مسواک کرنا سنّتِ مؤکدہ قرار دیا ہے۔ (شامی، ج۲، ص۱۶۸) اور جمہور نے سنت کہا ہے۔ ۲۔         مسواک دائیں جانب یعنی منہ کے دائیں رخ سے کرے۔ (مرقات، ص۳۰۰) ۳۔        امام نووی نے لکھا ہے کہ چھوٹے بچوں کو ...

مسواک کرنے کے مستحب اوقات

غایۃ الادراک میں یہ دعویٰ کیا گیا ہے کہ جن جن مقامات میں مسواک کرنا مستحب ہے وہ اتنے زیادہ ہیں کہ ان کا صحیح احاطہ کرنا اور بیان کرنا مشکل ہے، لیکن یہ کہنا تقریباً مغالطے سے خالی نہیں، اتنا مبالغہ بھی غیر مستحب ہے، حالاں کہ جو مقامات انہوں نے ذکر فرمائے ہیں وہ سب کے سب متداخل ہیں یعنی ایک میں بہت ساری جگہیں آجاتی ہیں، چنانچہ انہی کے طرز پر ذکر کرتے ہیں: ۱۔         وضو کے دوران مسواک سنّت ہے۔ فی سراج الظلام ...

مسواک کے پچاس فوائد

حضرت علامہ سیّد احمد طحطاوی حنفی﷫ نے مراقی الفلاح شرح نورالایضاح کے حاشیہ اَلطّحطاوی میں فرمایا کہ مسواک شریف کے وہ فضائل جو ائمّۂ کرام علیہم الرضوان نے حضرت علی﷜، حضرت ابن عباس﷜ اور حضرت عطاء﷜ سے نقل کیے ہیں، وہ درج ذیل ہیں۔   فرماتے ہیں کہ عَلَیْکُمْ بِالسِّوَاکِ فَلَا تَغْفُلُوْا عَنْہٗ وَاَدِیْمُوْہٗ۔ ترجمہ: مسواک شریف تم اپنے اوپر لازم کرلو، اس سے غفلت نہ برتو اور اس پر ہمیشگی کرو؛ فَاِنَّ فِیْہِ کیوں کہ اس میں درج ذیل (فوائد) ہیں: ...

مسواک کے مسائل

ویسے تو مسواک ہر لکڑی سے جائز ہے، بشرطیکہ موذی نہ ہو جیسا کہ صغیری میں ہے: ’’وقالوا یستاک بکل عوذٍ‘‘البتہ بعض درخت ایسے ہیں جن سے مسواک بنانا فائدے سے خالی نہیں، نیز چند باتیں ایسی ہیں جن کا خیال رکھنا مسواک میں ضروری ہے:   ۱۔ زہریلا درخت نہ ہو                      ۲۔ سخت لکڑی نہ ہو ۳۔ کانٹے دار نہ ہو  &n...

مسافر کی نماز

مسافر وہ شخص ہوتا ہے جو کم از کم (57) ستاون میل کے سفر کے ارادے سے اپنی بستی سے باہر نکل چکا ہو۔ مسافر پر واجب ہے کہ فقط فرض نماز میں قصر کرے یعنی چار رکعت والے فرض کو دو پڑھے۔ مسافر کے حق میں دو رکعتیں ہی پوری نماز ہے۔ اگر سہواً یا قصداً چار پڑھے اور دو کے بعد قعدہ کرے تو فرض ادا ہو جائے گا اور پچھلی دو رکعتیں نفل ہو جائیں گی۔ قصداً چار پڑھنے والا سخت گنہگار ہے۔ اس پر توبہ لازم ہے۔ مسافر جب تک اپنی بستی میں نہ آئے مسافر ہے۔ مسافر جس شہر یا بستی ...

غسل فرض ہونے کے پانچ اسباب

مندرجہ ذیل باتوں سے غسل فرض ہوجاتا ہے: ۱۔ منی کا اپنی جگہ سے شہوت کے ساتھ جدا ہوکر عضو سے نکلنا۔ ۲۔ احتلام یعنی سوتے میں منی کا نکلنا۔ ۳۔ شرمگاہ میں حشفہ تک چلے جانا،خواہ شہوت سے ہو یا بلا شہوت،انزال ہو نہ ہو، دونوں پر غسل فرض ہے۔ ۴۔ حیض یعنی ماہواری کے خون سے فراغت پانا۔ ۵۔ نفاس یعنی بچہ جننے پر جو خون آتا ہے اس سے فارغ ہونا۔ مسئلہ: منی شہوت کے ساتھ اپنی جگہ سے جدا نہ ہوئی بلکہ بوجھ اٹھانے یا بلندی سے گرنے کی وجہ سے نکلی تو غسل فرض نہیں ہوگا ال...

غسل کے فرائض

غسل میں تین فرض ہیں کہ ان کے بغیر غسل مکمل نہ ہوگا نہ ہی پاکی حاصل ہوگی۔ غسل کے فرائض مندرجہ ذیل ہیں: ۱۔ کلی کرنا۔اس طرح کہ منہ کے ہر حصے گوشت ہونٹ سے حلق کی جڑ تک ہر جگہ پانی بہہ جائے۔مسوڑھے،دانت کی کھڑکیاں،زبان کی ہر کروٹ میں حلق کے کنارے تک پانی بہے۔روزہ نہ ہو تو غرغرہ بھی کرے تاکہ پانی ہر جگہ اچھی طرح پہنچ جائے،دانت میں کوئی چیز اٹکی ہوئی ہو جیسے گوشت کا ریشہ،چھالیہ کے ٹکڑے،پان کی پتی وغیرہ تو جب تک ہٹانا نقصان نہ دیتا ہو ان کا چھڑانا ضروری ہ...