Maqamat  

مکہ مکرمہ کی اہم جگہوں میں ام المؤمنین سیدہ خدیجۃ الکبریٰ رضی اللہ تعالیٰ عنہا کا مکان بھی ہے، رسول اللہﷺ شادی کے بعد سے ہجرت تک اس مکان میں مقیم رہے ۔ اسی مکان میں حضورﷺ کی اولاد اطہار میں سوائے سیدنا ابراہیم رضی اللہ تعالیٰ عنہ کے سبھی یہاں پیدا ہوئے اور پر ورش پائی، سیدہ خدیجۃ الکبریٰ رضی اللہ تعالیٰ عنہاکا وصال بھی اسی مکان میں ہوا ۔اسی مکان میں حضرت جبریل امین علیہ السلام و حی لیکر حاضر ہوا کرتے تھے۔       &nbsp...

یہ مکان بھی مکہ مکرمہ کے متبرک مکانات سے ایک ہے اس کے دروازہ پر پتھر کندہ ہے۔ ھذہ الدارلرفیق رسول اللہ ﷺ فی الغار ورفیقہ فی الا سفار ترجمہ:   یہ مکان رسول اللہ ﷺ کے یار غار اور سفر کے ساتھی صدیق اکبر (رضی اللہ تعالیٰ عنہ )کا ہے۔ اس مکان کے سامنے کی دیوار پر پتھر تھا جسے لوگ احترام سے دیکھتے تھے اسے ہاتھ لگا کر بر کت حاصل کرتے تھے۔ مشہور ہے جب حضورﷺ یہاں سے گزرتے تو یہ آپکو سلام کیا کرتا ،ہو سکتا ہے یہی پتھر ہووہ جس کے متعلق حضور ﷺ کا ار...

یہ محلہ بڑا تاریخی ہے۔ حضرت سیّدنا اسماعیل علیہ السلام اور ان کی والدہ سیّدہ حاجرہ سلام اللہ علیہا نے اسے آباد کیا حضرت ابراہیم علیہ السلام نے بھی کچھ عرصہ قیام فرمایا۔ سیّدنا صدیق اکبر و فاروق اعظم اور سیّدنا حمزہ رضی اللہ تعالیٰ عنہم بھی اسی محلہ میں قیام پذیر تھے۔...

آپ حضور سید عالم ﷺ کی چچازاد بہن ہیں ۔ حضور ﷺ آپ کے ہاں کثرت سےتشریف لایا کرتے تھے۔ فتح مکہ کے موقع پر بھی آپ حضرت ام ہانی رضی اللہ تعالیٰ عنہاکے مکان پر تشریف لائے ،غسل فرمایا اور نوافل ادا کیے۔ سفر معراج کاآغاز بھی اسی مکان سے ہوا۔۱۹۶۰؁ء میں یہ جگہ جدید حرم میں داخل کردی گئی ۔ (بلد الامین ، ص ۲۰۴ تا ۲۰۵) فائدہ:           بعض بزرگوں کو صدری طور پر اس جگہ کا علم ہے ۔ کوئی خاص علامت موجود نہیں ہے۔ (ایضا...

یہ مشہور مقام صفا کے قریب واقع ہے۔ شروع اسلام میں حضور سید عالم ﷺ اسی میں رہا کرتے تھے، مشورے ہوتے تبلیغی نظام کو پروان چڑھانے کے منصوبے بنتے حضرت فاروق اعظم رضی اللہ عنہ اسی مکان میں حاضر ہوکر ایمان لائے تھے۔ سیدہ خدیجہ الکبریٰ رضی اللہ تعالیٰ عنہا کی حویلی    کے بعد اسے شرف حاصل ہے کہ حضور علیہ السلام دیر تک اس میں رہے اور سب سے بڑی وجہ شرف حضور ﷺ کی نسبت ہے۔ خلیفہ ہارون الرشید رحمۃ اللہ علیہ کی والدہ نے اس جگہ پر مسجد تعمیر کروا...

مسجد نبوی میں باب جبرائیل سے داخل ہوں تو مقام تہجد کے پیچھے کی جانب یہ چبوترہ موجود ہے۔ اس کے اطراف میں تقریبا دو فٹ اونچی پیتل کی جالی کا خوب صورت حصار بنا ہوا ہے۔ یہاں زائرین کرام تلاوت قرآن مجید بھی کرتے ہیں اور نماز بھی ادا کرتے ہیں۔ یہی وہ مقام ہے جہاں صحابہ کرام کا ایک گروہ اسلامی تعلیم کے حصول اور تطہیر قلوب کی خاطر صبح و شام قیام پذیر رہتا تھا۔ تاجدار مدینہ راحت قلب و سینہ صلی اللہ علیہ وسلمکے پاس جب کہیں سے صدقہ پہنچتا تو آپ صلی اللہ علی...